Home / جہاں نما / what is Chikungunya|Symptoms|Treatment By Hakeem Imran Kamboh

what is Chikungunya|Symptoms|Treatment By Hakeem Imran Kamboh

 چکن گونیا وائرس کیا ہے

چکن گونیا نامی یہ وائرس مچھروں سے انسان میں منتقل ہوتا ہے۔ یہ وائرس پھیلانے والے مچھر کم و بیش وہی ہیں جو ڈینگی اور

زکا وائرس پھیلانے کا سبب بنتے ہیں۔ اس کی سب سے پہلی اور عام علامات جوڑوں میں درد اور بخار ہے۔

اگر کوئی عام مچھر چکن گونیا سے متاثرہ کسی شخص کو کاٹ لے تو وہ مچھر بھی اس وائرس کے مچھر میں تبدیل ہوجاتا ہے جس

کے بعد وہ بھی اس کے پھیلاؤ میں حصہ دار بن جاتا ہے

what is ChikungunyaSymptomsTreatment By Hakeem Imran Kamboh

پاکستان کے شہر کراچی خصوصاملیر میں پھیلا ہے ایک نیاوائرس جسکانام چکن گونیاہے۔افریقہ سے آنے والا یہ کوئی نیاوائرس

نہیں ہے۔یہ وائرس پہلی دفعہ ۱۹۵۹ میں تنزانیہ میں ڈائیگنوس ہواتھا اور ۲۰۰۷ تک فرانس تک پھیل چکاتھا۔پاکستان میں اس

وائرس کی تشخیص اب ہوئی ہے۔ڈینگی کی طرح یہ وائرس بھی مچھر کے ذریعے منتقل ہوتاہے۔اس میں پلیٹلیٹس کاؤنٹ کم نہیں ہوتے

بلکہ یہ وائرس جسم سے سوڈیم اور پوٹاشیم کم کردیتاہے۔جوڑوں میں شدید درد کے باعث انسان ٹھیک طرح سے بیٹھ بھی نہیں پاتا

اسی لئے اسکا نام چکن گونیاہے۔

احتیاط اور علاج کے ذریعے وقت کے ساتھ یہ وائرس ٹھیک ہوجاتاہے۔ چکن گونیا کا شکار ہونے والوں میں بچے اور بڑے سب ہی

شامل ہیں۔اس وائرس کی کوئی ویکسین نہیں ہے۔بخار سے نہ گھبرائیں جب بھی جسم میں اینٹی باڈیز بنتی ہیں تو بخار چڑھتاہے۔اور

بیکٹیریاکا خاتمہ کرتاہے۔بس ہمت کے ساتھ اسکا علاج کریں۔اور فوری طور پر بخار اتارنے کے بجائے آہستہ آہستہ جسم کے درجہ

حرارت کو نیچے لائیں

what is ChikungunyaSymptomsTreatment By Hakeem Imran Kamboh

علامات

چکن گونیا وائرس کی علامات 3 سے 7 دن کے درمیان ظاہر ہوتی ہیں۔

اس وائرس کی سب سے پہلی اور عام علامت گھٹنوں، ہتھیلیوں اور ٹخنوں سمیت جسم کے دیگر جوڑوں میں شدید درد اور تیز بخار

ہے۔

دیگر علامات میں سر درد، پٹھوں میں درد، جوڑوں کا سوج جانا یا جلد پر خراشیں (ریشز) پڑجانا شامل ہیں۔

۔۱۰۴ درجہ حرارت تک بخار ہونا

سر میں شدید درد

متلی اور تھکاوٹ کا ہونا

جسم پر خارش اور سرخ نشانات

ایک وقت میں جسم کے دس جوڑوں میں درد

ہتھیلیوں میں جلن اور تکلیف

منہ میں چھالے

احتیاطی تدابیر

سب سے پہلے تو اپنے گھر اور اطراف کو مچھروں سے پاک کریں۔کیونکہ یہ بیماری صرف مچھروں کے کاٹنے سے پھیلتی ہے۔

۲جسم کو کپڑوں سے ڈھانپ کررکھیں۔پوری آستین کی شرٹ اور پاجامے پہنیں۔

مچھروں سے بچاؤ کے لئے لیموں کا رس اپنے ہاتھ پیروں پر لگائیں لیموں کی خوشبوسے مچھر آپکے نزدیک نہیں آئے گا۔

گھر میں تلسی کا پودا لگائیں اس سے مچھر نہیں آتے۔

نیم کا پودا یا نیم کے پتے بھی آپ اپنے گھر میں رکھیں۔

۶ہر ماہ صبح نہار منہ تین دن تک ایک چمچ شہد پانی میں ملاکر پی لیں اس سے کوئی بڑی بیماری لاحق نہیں ہوگی۔اسکے استعمال

سے تمام بیکٹیریادور ہوتے ہیں۔

کسی بھی علامت کی صورت میں گھر کی میڈیکیشن سے پرہیز کریں۔

علاج کے طریقے

اگر آپ کو چکن گونیا ہوچکا ہے تو بیماری کے تقریباً پہلے ہفتے خود کو مچھروں کے کاٹنے سے محفوظ رکھیں

بیماری کے پہلے ہفتے کے دوران یہ مرض آپ کے خون میں موجود ہوتا ہے، جو کسی اور مچھر کے کاٹنے پر اس میں منتقل

ہوسکتا ہے، جو پھر دیگر افراد میں اس وائرس کو منتقل کرسکتا ہے۔

اس وائرس کا کوئی علاج نہیں ہے۔اسمیں Symptomatic Treatment ہوتاہے۔کسی بھی علامت کے ظاہر ہونے کی

صورت میں آپ سب سے پہلے ڈاکٹر کے پاس ضرور جائیں لیکن ساتھ ساتھ ذیل میں بیان گھریلوطریقوں پر عمل کرکے آپ اپنی تکلیف میں

کمی لاسکتے ہیں۔

حفظان صحت کے اصولوں پر عمل کریں۔

2دن بھر خوب پانی پیئیں۔ساگودانہ استعمال کریں۔سیب کے جوس میں لیموں ملاکر پیئیں

رات کی رانی کے سات پتے اور سات کالی مرچ دو کپ پانی میں اتنا پکالیں کہ آدھا رہ جائے۔چھان کر رکھ لیں۔ہر آدھے گھنٹے بعد آدھا

چمچ پی لیں۔

بچوں کو بخار ہونے کی صورت میں منقہ اور عناب سات سات دانے اور خاکسیر اور بی دانہ ایک ایک چمچ لے کر ایک گلاس پانی

میں پکاکر چھان کر رکھ لیں۔اور ہر تھوڑی دیر میں تھوڑا تھوڑا پلاتے رہیں۔

سورنجان شیریں،اسگندھ ناگوری،کرنجوا اور خاکسیر پیس کر رکھ لیں۔بچوں کو ایک چوتھائی اور بڑوں کو آدھاچمچ نیم گرم دودھ کے ساتھ دیں

بخار بھی اترے گا اور جوڑوں کے درد میں بھی کمی آئے گی۔

درد کی صورت میں کیسٹر آئل میں تھوڑا سا لیونڈر آئل اور دار چینی کاپاؤڈر ملاکر مساج کریں۔اور کپڑا لپیٹ لیں۔جوڑوں کے درد میں

آرام آئے گا۔

بخار کی صورت میں پانچ دانے منقہ کے بیج نکال کر اسمیں خاکسیر بھر کر توے پر ہلکا ساسینک کر کھلادیں۔خاکسیر سے بخار اتر

جاتاہے۔

 

error: Content is protected !!